عدالت میں وکیل کی طرف سے پیش کردہ ثبوت نے جان لے لی

0
112

 ADALAT MEIN PESH KARDA SABOOT NE JAAN LAY LI

تفصیلات کے مطابق گھریلو ڈکیتی میں استعمال ہونے والی گن کو خاتون وکیل عدالت میں بطور ثبوت لے کر آئیں ۔51 سالہ مشہور وکیل ایڈلیلیڈ فریراواٹ  اس کیس کی پیروی کر رہی تھیں ۔انھوں نے جس شارٹ گن کو بطور ثبوت پیش کیا وہ لوڈڈ تھی ۔دوران جرح گن  ان کے ہاتھ سے چھوٹ جانے کی وجہ سے   فائر ہو گیا

لوڈڈ شاٹ گن سے نکلی گولی سیدھی انکے کولہے میں لگی جس کی وجہ سے خون بہنا شروع ہو گیا انکو اسبتال منتقل کیا گیا لیکن اس وقت تک کافی خون بہہ چکا تھا جو ان کی موت کا باعث بن گیا ۔

جنوبی افریقہ میں ہونے والے اس حادثہ کی تحقیق پولیس کر رہی ہے پولیس تمام شواہد اکٹھی کر رہی تاکہ سازش ہونے کی صورت میں اس کو بے نقاب کیاجاسکے۔لیکن  حساس معاملہ ہونے کی وجہ سے پولیس اس حادثہ کے متعلق  مزید تفصیلات دینے سے انکار کر رہی ہے ۔

ایڈیلیڈ کی موت کی خبر پورے شہر میں پل بھر میں ہی پھیل گئی بہت سینئیر وکیل ہونے کی وجہ سے بڑی تعداد میں لوگوں کی طرف سے غم کا اظہار کیا گیا اور سوشل میڈیا  پر  بھی غم کے اظہار  کے ساتھ ساتھ اس واقعہ کی جلد از جلد تحقیقات کروانے کا مطالبہ کیا گیا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں