عمران خان کا دورہ امریکہ ،اسلام فوبیا اور دہشت گردی پر کھل کے بیانات

0
33
Imran Khan united Nation Speech

عمران خان نے دورہ امریکہ کے دوران اسلام کی تعلیمات کے حق میں کھل کر بیانات دیتے ہوئے کہا کہ  ہم جس اسلام پر یقین رکھتے ہیں وہ ایک ہی ہے جس کی تعلیمات ہمارے پیارے ٓآقا حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے دی ہیں ۔ ہر مسلمان

آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے خاص عقیدت رکھتا ہے جس کے بارے میں یورپ والوں کو بالکل علم نہیں ہے جس کی وجہ سے انھیں اندازہ ہی نہیں ہو پاتاکہ جب کوئی نعوذ باللہ  ٓآپ صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں گستاخی کرتاہے تو ایک مسلمان  کو کتنی تکلیف ہوتی ہے ۔عمران خان نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ دہشت گردی اور مذہب کا آپس میں کوئی جوڑ نہیں ہے ۔انتہا پسندی اس وقت جنم لیتی ہے جب انسان کو بنیادی حقوق سے محروم رکھا جاتاہے

عمران خان نے اسلام فوبیا نے اظہا رخیال کرتے ہوے کہا کہ اسلام کے متعق پیدا کیے گئے خوف کو ختم کرنے کے لیے اقدامات کرنے چاہیں اور دنیا میں موجود تمام طبقہ کے لوگوں کے درمیان برداشت،باہمی تعاون بڑھانا چاہیے اور نفرت انگیز  بیانیے کا ازالہ کیا جانا چاہیے ایسے تمام عوامل جن سے لوگوں میں نفرت پھیلتی ہے اور عدم برداشت پیدا ہوتی ہے ان کی روک تھام کے لئے اقوام متحدہ کا پلیٹ فارم استعمال کرنا چاہئے

عمران خان نے اسلام کو دہشت گردی کے ساتھ جوڑے جانے والے عمل کو غیر منصفانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ نائن الیون سے پہلے تامل ٹائیگر  دہشت گرد حملوں میں سب سے آگے تھے لیکن ہندو مذہب کو دہشت گرد نہیں کہا گیا ،جاپان کے فوجیوں نے دوسری جنگ عظیم میں خود کش حملے کیے ،جرمن مسجدوں میں مسلمانوں کا قتل کیا گیا لیکن اس واقعہ سے مذہب کو بالکل علیحدہ رکھا گیا

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں