لاہوری ریکارڈ بنانے سے محروم

0
88
Frog Lahore

کچھ  دن پہلے کی بات ہے کہ جب سوشل میڈیا کی برکت سے ہر پاکستانی کی زبان پر  لاہوری ڈڈوں  کا چرچا عام تھا۔ہر کھانے کی ڈش میں ڈڈو ایک لازمی جزو کے طور پر سامنے آرہا تھا ایسا محسوس ہو رہا تھا جیسے ماضی میں ہمیں صحت مند خوراک ہی نصیب نہیں ہوئ اور ہم ڈڈو کی صورت میں ایک بنیادی وٹامن سے محروم رہ گئے۔ان خاص دنوں میں ڈڈوہ تقریباً ہر ڈش میں ایکٹیو نظر آئے لیکن ذیادہ پذیرائی انکو شورامے،کڑاہی اور مصالحہ جات میں نصیب ہوئی جبکہ انسانی خواص میں اس وٹامن کی موجودگی  کا احساس ٹر ٹر ،ٹاءیں ٹاءیں اور زیادہ پھدکنے کی صورت میں سامنے آیا۔اس نازک صورتحال میں دیگر جانور بلی اور کوا وغیر لاہوریوں سے صرف نظر کی اپیل کرتے نظر آئے ۔لیکن جب  اس خبر کا پوسٹ مارٹم ہوا تو ڈڈو بے گناہ ثابت ہوئے لیکن ڈڈوں کے لیے یہ لرزہ خیز انکشاف انکی شان میں گستاخی  ثابت ہوا کیونکہ چند دنوں میں ہی انھیں لاہوریوں نے جس مقام پر کھڑا کر دیا تھا  اس مقام سے اچانک  یوٹرن لینا ایٹم بمب گرانے کے مترادف تھا   ۔

لاہوریوں کے لیے بھی یہ صورتحال کوئی خاصی خوش گوار نہیں تھی یہ ان  پر بہت  کڑا وقت تھا  اس سال بھی کھانے کی نئی ڈش متعارف کروانے کی روش دم توڑتی نظر آرہی تھی افسوس اس سال  لاہوری نئ کھانے کی   ڈش متعارف کروانے  سے رہ گئے لیکن ابھی اس  سال کے اختتام میں تین ماہ باقی ہیں تھوڑی سے کوشش سے خاطرخواہ نتائج حاصل کیے جاسکتے ہیں

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں